بنیادی صفحہ » خبریں »

نیا پاکستان تب بنے گا جب چوروں کو پکڑا جائے گا

Try WordPress Hosting Free for 30 Days | Cloudaccess.net

نیا پاکستان تب بنے گا جب چوروں کو پکڑا جائے گا

پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان کا کہوٹہ میں جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے کہنا تھا کہ نیا پاکستان تب بنے گا جب چوروں کو پکڑا جائے گا۔ حکمران جھوٹا ہو تو سارے ملک کا نظام اور ادارے تباہ کر دیتا ہے۔ 30 سال سے نواز شریف کا احتساب نہیں ہوا کیونکہ وہ اداروں کو خرید لیتے تھے۔ انہوں نے ہمیشہ ڈاکوؤں سے مک مکا کیا۔ عمران خان کا کہنا تھا کہ اگلے ہفتے ہفتہ فیصلہ ہو گا کہ کیا یہ ڈاکوؤں کا پاکستان ہو گا یا نیا پاکستان بنے گا؟ جے آئی ٹی کی رپورٹ پر نیا پاکستان بننے جا رہا ہے، اگلے ہفتے فیصلہ ہو جائے گا۔
ان کا کہنا تھا کہ پاکستان آج ایک مقروض ملک بنتا جا رہا ہے۔ یہاں ایک چھوٹا سا طبقہ امیر سے امیر تر ہوتا جا رہا ہے۔ مہنگائی کا سارا بوجھ صرف غریبوں پر ڈالا جا رہا ہے۔ ہر سال ایک ہزار ارب منی لانڈرنگ کے ذریعے ملک سے باہر جاتا ہے۔ انہوں نے الزام عائد کیا کہ شریف مافیا کرپٹ مافیا کا دفاع کرتا ہے۔

اپنی رائے دیں

%d bloggers like this: