بنیادی صفحہ » الیکشن »

ہارس ٹریڈنگ کی اصطلاع کب اور کیسے شروع ہوئی

ہارس ٹریڈنگ کی اصطلاع کب اور کیسے شروع ہوئی

چنگیز خان نے آدھی دنیا فتح کیسے کی؟ اس کے لیے ا س نے دو فارمولے اپنائے تھے۔پہلا فارمولا حرکت یعنی رفتار تھی،چنگیز خان کا لشکر ایک ہفتے میں وہاں پہنچ جاتا تھا جہاں پہنچے میں دوسری فوجوں کو مہینہ لگتاتھا،اس رفتار کے لیے اس نے پیدل دستے ختم کر کے اپنا سارا لشکر گھوڑوں پرشفٹ کردیا تھا،اس کے ہر سپاہی کے پاس تین تین گھوڑے ہوتے تھے۔دوران سفر جب کسی سپاہی کا گھوڑا تھک جاتا تھاتو وہ اس گھوڑے کو ذبح کر دیتا تھا،اس کا خون دوسرے گھوڑوں کو پلا دیتا تھااور گوشت کاٹ کر اپنے پاس رکھ لیتا تھااوردوسرے گھوڑے پرسوارہوجاتا تھا۔چناچہ چنگیز خان کا لشکر بغیر روکے آگے بڑھا چلا جا تا تھا۔
دوسرا فارمولا ٹکنیک تھا،تاتاری دنیا کے پہلے لوگ تھے جو دوڑتے ہوئے گھوڑے پر بیٹھ کر تیر چلا سکتے تھے،اس سے پہلے دنیا اس ٹکنیک سے واقف نہیں تھی، چنانچہ چنگیز خان نے وار ٹیکنالوجی میں رفتار اور ٹکنیک میں اضافہ کیا۔
چنگیز خان کو پوری زندگی میں صرف ایک شخص نے ٹف ٹائم دیا تھااور یہ شخص ترکستان کا حکمران علاو¿الدین خوزم شاہ تھا۔ چنگیز خان جب شمالی چین فتح کرنے کے بعد 1215میں ترکستان کی طرف بڑھا تو اس وقت خوزم شاہ اس کے جنگی فارمولوں اورٹکینک کو سمجھ چکا تھا۔
چنانچہ اس نے شمالی چین سے لے کرسمر قند تک راستے کے تمام شہروں اور بستیوں کے تما م گھوڑوں خرید لیے۔ جب تاتاری چین سے نکلے تو وہ گھوڑوں کی شدید کمی کا شکار ہو گئے جس کے نتیجہ میں تاریخ میں پہلی بار ہارس ٹریڈنگ کی اصلاح سامنے آئی۔خوزم شاہ دنیا کا پہلا حکمران تھا جس نے دشمن کو شکست دینے کے لیے ہارس ٹریڈنگ کی ٹکنیک استعمال کی تھی۔
یہ اصلاح اور یہ ٹکنیک 1893تک صرف جنگی کتابوں اور عظیم جرنلوں کے کارناموں تک محدود تھی۔لیکن پھر 1893میں امریکہ کے مشہور اخبار نیو یارک ٹائم نے پہلی بار یہ اصلاح سیاسی معنی میں استعمال کی۔جس کے بعد ہارس ٹریڈنگ سیاست کا حصہ بن گی۔اس سے قبل 1790میں امریکہ کے صدر تھمس جیفرسن نے بھی امریکہ کے کیپیٹل کو تبدیل کرنے کے لیے جیزمیڈیسن اور الگزڈر ہیمٹن کے ووٹ خریدنے کے لیے کوشش کی تھی اور اس وقت کے سیاستدانوں نے بھی اسے ہارس ٹریڈنگ کا نام دیا تھا۔
جب کہ 1820 میں رس کے گھوڑے امریکن کلچر میں سنپری بن گے تھے۔اس دور میں اس امریکہ بزنس میں کو بڑا بزنس مین سمھجاجاتا تھا جس کے پاس اعلی نسل کے زیادہ سے زیادہ گھوڑے ہوتے تھے اور گھوڑوں کی اس سنپری کی وجہ سے امریکن رائٹر نے امریکہ کے اس دور کوہارس ٹریڈنگ گیج لکھنا شروع کر دیا تھا۔ ہارس ٹریڈنگ گندی سیاست کا ایک گندا کھیل ہوتا ہے جس میں ایک سیاسی پارٹی اقتدار کے حصول کے لیے دوسری پارٹی کے ارکان اسمبلی کو خریدنے کی کوشش کرتی ہے۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*

%d bloggers like this: