بنیادی صفحہ » الیکشن »

حلقہ این اے34 ( لوئر دیر 1)

حلقہ این اے34 ( لوئر دیر 1)

ضلع لوئر دیر کو 1970میں مالاکنڈ ڈویژن میں ضم کر دیا گیا۔ لوئر دیر کو اگست1996میں مالاکنڈ ڈویژن کے ایک علیحدہ ضلع کی حیثیت دی گئی۔ اس ضلع کاکل رقبہ1583مربع کلومیٹر ہے ۔ ضلع لوئر دیر کی قومی اسمبلی میں 1جبکہ صوبائی اسمبلی میں کل4نشستیں ہیں۔
الیکشن 2013میں حلقہ این اے34( لوئر دیر1 ) سے جماعت اسلامی کے امیدوار صاحبزادہ محمد یعقوب49475ووٹ لیکر کامیاب ہوئے، پاکستان تحریک انصاف کے امیدوار محمد بشیر خان45066 ووٹ لیکر دوسرے نمبر پر رہے، جمعیت علما اسلام ف کے امیدوار فضل اللہ نے22552ووٹ لیکر تیسری پوزیشن حاصل کی، عوامی نیشنل پارٹی کے امیدوار محمد اعظم خان نے 8959 ووٹ لیے، تحریک پاسبان عوام پاکستان کے امیدوار حاجی محمد عمرنے7206ووٹ لیے، پاکستان پیپلز پارٹی کے امیدوار ملک عظمت خان نے 6275ووٹ لیے، پاکستان مسلم لیگ ن کے امیدوار فرید خان یوسفزئی نے 5818ووٹ لیے۔
2008کے انتخابات میں پاکستان پیپلز پارٹی کے امیدوار ملک عظمت خان نے اس حلقہ سے38068ووٹ لیکر کامیابی حاصل کی تھی، جبکہ عوامی نیشنل پارٹی کے امیدوار محمد یعقوب خان نے24480 ووٹ لیکر دوسرے نمبر پر رہے۔ ایم ایم اے کے امیدوار قاضی فضل اللہ نے11449ووٹ لیے، پاکستان مسلم لیگ ق کے امیدوار جاوید اقبال نے3366ووٹ لیے، آزاد امیدوار فرہاد علی خان نے 761ووٹ لیے۔
2002کے انتخابات میں ایم ایم اے کے امیدوار قاضی حسین احمد نے53799 ووٹ لیکر کامیابی حاصل کی جبکہ عوامی نیشنل پارٹی کے امیدوار محمد ایوب خان نے34078ووٹ لیکر دوسرے نمبر پر رہے، پاکستان تحریک انصاف کے امیدوار محمد بشیر نے1136ووٹ لیے، پاکستان مسلم لیگ ق کے امیدوار سرادر عبدل حکیم تاجک نے 1123ووٹ لیے، پاکستان مسلم لیگ ن کے امیدوار محمد رشید خان نے 224ووٹ لیے۔
جنوری 2003 میں ہونے والے ضمنی انتخابات میں ایم ایم اے کے امیدوار عبدل غفور خواص نے45815 ووٹ لیکر کامیابی حاصل کی جبکہ پاکستان پیپلز پارٹی ( شیر پاو) کے امیدوار احمد حسن خان نے29581ووٹ لیکر دوسرے نمبر پر رہے، پاکستان پیپلز پارٹی کے امیدوار اورنگ زیب نے1632ووٹ لیے۔
1997کے انتخابات میں آزاد امیدوارحاجی باز گل آفریدی کامیاب ہوئے، 1993کے انتخابات میں آزاد امیدوار ملک ایم اسلم خان آفریدی کامیاب ہوئے، 1990کے انتخابات میں بھی آزاد امیدوار ملک ایم اسلم خان آفریدی کامیاب ہوئے، 1988کے انتخابات میں آزاد امیدوار معین خان آفریدی کامیاب ہوئے، 1985کے غیر جماعتی انتخابات میں حاجی نور شیر خان کامیاب ہوئے، 1977کے انتخابات میں آزاد امیدوارحاجی نور شیر خان کامیاب ہوئے ۔
 
صوبائی حلقے پی کے94, 95, 96, 97 ( لوئر دیر 1, 2, 3, 4 )
الیکشن 2013میں حلقہ این اے34 کے صوبائی حلقے پی کے94 لوئر دیر1 سے جماعت اسلامی کے امیدوار مظفر سعید نے14456ووٹ لیکر کامیابی حاصل کی، پاکستان پیپلز پارٹی کے امیدوار محمود زیب خان نے9691 ووٹ لیکر دوسری پوزیشن حاصل کی، عوامی نیشنل پارٹی کے امیدوار محمد ایوب خان نے7010ووٹ لیے، پاکستان تحریک انصاف کے امیدوار محمد انعام خان نے6977 ووٹ لیے، جمعیت علما اسلام ف کے امیدوار ایاز الدین نے1996ووٹ لیے۔
الیکشن 2013میں حلقہ این اے34 کے صوبائی حلقے پی کے95 لوئر دیر2 سے جماعت اسلامی کے امیدوار سراج الحق نے23030 ووٹ لیکر کامیابی حاصل کی تھی، عوامی نیشنل پارٹی کے امیدوار ہدایت اللہ خان نے11130ووٹ لیکر دوسری پوزیشن حاصل کی، پاکستان تحریک انصاف کے امیدوار عبید اللہ ساجد نے1917ووٹ لیے، پاکستان پیپلز پارٹی کے امیدوار رحمت اللہ خان نے676ووٹ لیے، جمعیت علما اسلام ف کے امیدوار عبدل رحمن خان نے614ووٹ لیے۔
اس حلقہ سے سراج الحق کے استعفیٰ کے بعد مارچ 2016میں ہونے والے ضمنی انتخاب میں جماعت اسلامی کے امیدوار اعزاز الحسن کامیاب ہوئے۔
الیکشن 2013میں حلقہ این اے34 کے صوبائی حلقے پی کے96 لوئر دیر3 سے جماعت اسلامی کے امیدوار سعید گل نے14193 ووٹ لیکر کامیابی حاصل کی، پاکستان پیپلز پارٹی کے امیدوار محمد زمین خان نے7391ووٹ لیکر دوسری پوزیشن حاصل کی، پاکستان تحریک انصافکے امیدوار مبارک جان نے5085ووٹ لیے، عوامی نیشنل پارٹی کے امیدوارنعیم جان نے1295ووٹ لیے، جمعیت علما اسلام ف کے امیدوارمحمد شاکر اللہ خان نے625ووٹ لیے۔
الیکشن 2013میں حلقہ این اے34 کے صوبائی حلقے پی کے97 لوئر دیر4 سے قومی وطن پارٹی کے امیدوار بخت بیدار نے10965 ووٹ لیکر کامیابی حاصل کی، جماعت اسلامی کے امیدوار سلطنت یار نے 7628ووٹ لیکر دوسری پوزیشن حاصل کی،پاکستان پیپلز پارٹی کے امیدوار ذاکر اللہ خان نے6200ووٹ لیے، جمعیت علما اسلام ف کے امیدوار گل نصیب خان نے4710ووٹ لیے، پاکستان تحریک انصاف کے امیدوارملک فخر الزمان خان نے4396ووٹ لیے۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*

%d bloggers like this: