بنیادی صفحہ » Parveen Shakir »

بس اتنا یاد ہے

Try WordPress Hosting Free for 30 Days | Cloudaccess.net

بس اتنا یاد ہے

دعا تو جانے کون سی تھی
ذہن میں نہیں
بس اتنا یاد ہے
کہ دو ہتھیلیاں ملی ہوئی تھیں
جن میں ایک مری تھی
اور اک تمھاری !

اپنی رائے دیں

%d bloggers like this: